Bey Qarrari Si Hai By Jaun Elia  بے قراری سی بے قراری ہے  وصل ہے اور فراق طاری ہے  جو گزاری نہ جا سکی ہم سے  ہم نے وہ زندگی گزاری ہے  بن تم...
ہ م آپ سے کچھ نہیں چاہتے، ہم صرف آپ کو چاہتے ہیں، چاہتے ہیں! آپ ہمیں پسند نہیں کرتے، کوئی بات نہیں! ہم آپ کے ساتھ محبت میں ہیں! خواہش کی چیز...
Tere Khwab Bhi Ho Gawra By Jaun Elia تِرے خواب بھی ہُوں گنوارہا ، ترے رنگ بھی ہیں بکھررہے  یہی روز و شب ہیں تو جانِ جاں یہ وظیفہ خوار تو م...
 zameen toh kuch bhi nehi By Jaun Elia   زمیں تو کچھ بھی نہیں، آسماں تو کچھ بھی نہیں اگر گمان نہ ہو، درمیاں تو کچھ بھی نہیں حریم جاں میں ہ...
Hasrat e rang Ayi thi By Jaun Elia حسرتِ رنگ آئی تھی دل کو لگا کے لے گئی یاد تھی، اپنے آپ کو یاد دلا کے لے گئی خیمہ گہہِ فراق سے، خیمہ گہ...
Gham mein thi Aik khushi kiya ki By Jaun Elia تو نے مستی وجود کی کیا کی  غم میں بھی تھی جو اِک خوشی کیا کی  ناز بردارِ دل براں اے دل  تو نے...
 Kaf e sufeed sar sahil tamana hai By Jaun Elia کفِ سفیدِ سرِ ساحلِ تمنا ہے اور اس کے بعد سرابوں کا ایک دریا ہے یہ آرزو کا فسوں زار جاودان...