tuhfa doon tuj ko

Main ne caha ke tuhfa doon tuj ko Meray dahman main yadoon ke sewa kuch be nahen Zindage bhar na parey tum per gahmoon ka saya Meray honton per duwayon ke sewa kuch be nahen Tum salamat raho hazar baras aur............Har baras ke din hown 50 baras
tuhfa doon tuj ko
میں نے چاہا كہ تحفہ دوں تجھ کو میرے دامن میں یادوں كے سوا کچھ  نہیں زندگی بھر نہ پڑے تم پر ٖٖغموں کا سایہ میرے ہونٹوں پر دعاؤں كے سوا کچھ  نہیں تم سلامت رہو ہزار برس اور . . . . . . . . . . . . ہر برس كے دن ہون 50‬ برس

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے

Featured Post

Mirza ghalib fikar insaa par tri hasti se