Allama Iqbal Poetry In Urdu




کی محمد سے وفا تو نے تو ہم تیرے ہیں

یہ جہاں چیز ہے کیا لوح و قلم تیرے ہیں
Allama Iqbal Poetry In Urdu

ki Mohammad se wafa to ney to hum tairay hain
yeh jahan cheez hai kya looh o qalam tairay hain
-------------------------------------------


dhoondata phirta hon mein iaqbal apne aap ko

aap hi goya musafir aap hi manzil hon mein


Check this Jaun Elia Poetry



ڈھونڈتا پھرتا ہوں میں اقبالؔ اپنے آپ کو

آپ ہی گویا مسافر آپ ہی منزل ہوں میں


-------------------------------------------
woh harf raaz ke mujh ko sikha gaya hai junoo
kkhuda mujhe nafs jibrael day to kahun


وہ حرف راز کہ مجھ کو سکھا گیا ہے جنوں 

خدا مجھے نفس جبرئیل دے تو کہوں


-------------------------------------------

watan ki fikar kar nadan museebat anay wali hai

tri barbadiyon ke mashwaray hain aasmaanon mein

وطن کی فکر کر ناداں مصیبت آنے والی ہے

تری بربادیوں کے مشورے ہیں آسمانوں میں


-------------------------------------------

wujood zan se hai tasweer kaayenaat mein rang

isi ke saaz se hai zindagi ka soaz daroon

وجود زن سے ہے تصویر کائنات میں رنگ 

اسی کے ساز سے ہے زندگی کا سوز دروں

-------------------------------------------
nahi hai na umeed iqbal apni kasht viran se

zara num ho to yeh matti bohat zarkhaiz hai saqi


نہیں ہے ناامید اقبالؔ اپنی کشت ویراں سے 

ذرا نم ہو تو یہ مٹی بہت زرخیز ہے ساقی


-------------------------------------------
nahi tera nashiman qasr sultaani ke gunbad par

to shahin hai basera kar pahoron ki chatanoo mein


نہیں تیرا نشیمن قصر سلطانی کے گنبد پر 

تو شاہیں ہے بسیرا کر پہاڑوں کی چٹانوں میں


-------------------------------------------

nahi is khuli fiza mein koi gosha faraghat

yeh jahan ajab jahan hai nah qafas nah ashyan


نہیں اس کھلی فضا میں کوئی گوشۂ فراغت 

یہ جہاں عجب جہاں ہے نہ قفس نہ آشیانہ


-------------------------------------------
nah samjhoo ge to mit jao ge ae hindostan walo
tumhari dastan taq bhi nah hogi dastanoon mein

نہ سمجھو گے تو مٹ جاؤ گے اے ہندوستاں والو 
تمہاری داستاں تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں

-------------------------------------------
nah pucho mujh se lazzat khanman barbaad rehne ki
nashiman secron mein ne bana kar phoonk daaley hain


نہ پوچھو مجھ سے لذت خانماں برباد رہنے کی 
نشیمن سیکڑوں میں نے بنا کر پھونک ڈالے ہیں

-------------------------------------------
nikal ja aqal se agay ke yeh noor
chairag raah hai manzil nahi hai

نکل جا عقل سے آگے کہ یہ نور 
چراغ راہ ہے منزل نہیں ہے

-------------------------------------------
nigha buland sukhan dil Nawaz jaan prsoz

yahi hai rakhat safar Meer kaarwaan ke liye


نگہ بلند سخن دل نواز جاں پرسوز 
یہی ہے رخت سفر میر کارواں کے لیے


-------------------------------------------
nigah ishhq dil zindah ki talaash mein hai

shikaar murda sazawar shahbaaz nahi

نگاہ عشق دل زندہ کی تلاش میں ہے 
شکار مردہ سزاوار شاہباز نہیں


-------------------------------------------

nasha pila ke girana to sab ko aata hai
maza to tab hai ke gartoon ko thaam le saqi



نشہ پلا کے گرانا تو سب کو آتا ہے
مزا تو تب ہے کہ گرتوں کو تھام لے ساقی

-------------------------------------------

mein jo sir bah sajda hua kabhi to zamee se anay lagi sada
tera dil to hai sanam aashna tujhy kya miley ga namaz mein


میں جو سر بہ سجدہ ہوا کبھی تو زمیں سے آنے لگی صدا 
ترا دل تو ہے صنم آشنا تجھے کیا ملے گا نماز میں


-------------------------------------------
mein tujh ko batata hon taqdeer mnh kya hai

Shamsheer o sinaan awwal taaos o Rubab aakhir


میں تجھ کو بتاتا ہوں تقدیر امم کیا ہے 
شمشیر و سناں اول طاؤس و رباب آخر


-------------------------------------------

mahinay wasal ke ghrhyon ki soorat urrtay jatay hain
magar ghariyaan judai ki guzarti hain mahino mein

مہینے وصل کے گھڑیوں کی صورت اڑتے جاتے ہیں
مگر گھڑیاں جدائی کی گزرتی ہیں مہینوں میں

-------------------------------------------

moti samajh ke shaan kareemi ny chunn liye
qatra jo they maray arq e anfeal ke


موتی سمجھ کے شان کریمی نے چن لیے 
قطرہ جو تھے مرے عرق انفعال کے


-------------------------------------------
mann ki doulat haath aati hai to phir jati nahi
tan ki doulat chaon hai aata hai dhun jata hai dhun


من کی دولت ہاتھ آتی ہے تو پھر جاتی نہیں 
تن کی دولت چھاؤں ہے آتا ہے دھن جاتا ہے دھن

-----------------------------------
miley ga manzil maqsood ka isi ko suraagh
andheri shab mein hai cheetay ki aankhh jis ka chairag


ملے گا منزل مقصود کا اسی کو سراغ 
اندھیری شب میں ہے چیتے کی آنکھ جس کا چراغ




Allama Iqbal Sms Poetry In Urdu
-----------------------------------
maqam shoq tre qdsyon ke bas ka nahi
inhen ka kaam hai yeh jin ke hauslay hain Ziyaad


مقام شوق ترے قدسیوں کے بس کا نہیں 
انہیں کا کام ہے یہ جن کے حوصلے ہیں زیاد

-----------------------------------
masjid to bana di shab bhar mein ayman ki hararat walon ny
mean apna purana paapi hai barson mein namazi ban nah saka


مسجد تو بنا دی شب بھر میں ایماں کی حرارت والوں نے
مین اپنا پرانا پاپی ہے برسوں میں نمازی بن نہ سکا

-----------------------------------
maray junoo ny zamane ko khoob pehchana
woh perhan mujhe bakhsha ke Parah Parah nahi

مرے جنوں نے زمانے کو خوب پہچانا 
وہ پیرہن مجھے بخشا کہ پارہ پارہ نہیں
-----------------------------------
mureed saada to ro ro ke ho gaya Taib
kkhuda kere ke miley Sheikh ko bhi yeh tofeq


مرید سادہ تو رو رو کے ہو گیا تائب 
خدا کرے کہ ملے شیخ کو بھی یہ توفیق

-----------------------------------
meri nigah mein woh rind hi nahi saqi
jo hoshyari o masti mein imtiaz kere



مری نگاہ میں وہ رند ہی نہیں ساقی 
جو ہوشیاری و مستی میں امتیاز کرے

-----------------------------------
mazhab nahi sakata aapas mein bair rakhna
hindi hain hum watan hai hindostan hamara


مذہب نہیں سکھاتا آپس میں بیر رکھنا
ہندی ہیں ہم وطن ہے ہندوستاں ہمارا

-----------------------------------
mujhe rokay ga to ae nakhuda kya ghark honay se
ke jin ko doobna hai doob jatay hain safeno mein


مجھے روکے گا تو اے ناخدا کیا غرق ہونے سے
کہ جن کو ڈوبنا ہے ڈوب جاتے ہیں سفینوں میں


-----------------------------------

maana ke teri deed ke qabil nahi hon mein
to mera shoq dekh mra intzaar dekh

مانا کہ تیری دید کے قابل نہیں ہوں میں 
تو میرا شوق دیکھ مرا انتظار دیکھ

---------------------------------
gisoye Tabdar ko aur bhi Tabdar kar
hosh o khiirad shikaar kar qalb o nazar shikaar kar


گیسوئے تابدار کو اور بھی تابدار کر 
ہوش و خرد شکار کر قلب و نظر شکار کر

---------------------------------
gullzaar hist o bood nah begana waar dekh
hai dekhnay ki cheez usay baar baar dekh



گلزار ہست و بود نہ بیگانہ وار دیکھ 
ہے دیکھنے کی چیز اسے بار بار دیکھ

-------------------------------

gala to ghoont diya ahal madrassa ny tra
kahan se aeye sada laa ala ila allah


گلا تو گھونٹ دیا اہل مدرسہ نے ترا 
کہاں سے آئے صدا لا الٰہ الا اللّٰہ

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے

Featured Post

Mirza ghalib fikar insaa par tri hasti se