Aik Soda By Jaun Elia -تھا اک سودا


سر میں تکمیل کا تھا اک سودا 


Aik Soda By Jaun Elia -تھا اک سودا



ذات میں اپنی تھا ادھورا میں 

کیا کہوں تم سے کتنا نادم ہوں 

تم سے مل کر ہوا نہ پورا میں

Check this out


sir mein takmeel ka tha ik soda

zaat mein apni tha adhoora mein

kya kahoon tum se kitna nadim hon


tum se mil kar sun-hwa nah poora mein

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے

Featured Post

Mirza ghalib fikar insaa par tri hasti se