Jee Hi Jee By Jaun Elia - جی ہی جی میں وہ جل رہی ہو گی


Jee Hi Jee By Jaun Elia - جی ہی جی میں وہ جل رہی ہو گی
جی ہی جی میں وہ جل رہی ہو گی 

چاندنی میں ٹہل رہی ہو گی  

چاند نے تان لی ہے چادرِ ابر

اب وہ کپڑے بدل رہی ہو گی  

سو گئی ہو گی وہ شفق اندام 

سبز قندیل جل رہی ہو گی
  
سرخ اور سبز وادیوں کی طرف 

وہ مرے ساتھ چل رہی ہو گی  

چڑھتے چڑھتے کسی پہاڑی پر

اب وہ کروٹ بدل رہی ہو گی
  
پیڑ کی چھال سے رگڑ کھا کر

وہ تنے سے پھسل رہی ہو گی
نیلگوں جھیل ناف تک پہنے 

صندلیں جسم مل رہی ہو گی
  
ہو کے وہ خوابِ عیش سے بیدار

کتنی ہی دیر شل رہی ہو گی


Check this out

jee hi jee mein woh jal rahi ho gi



chandni mein tehel rahi ho gi




chaand ney taan li hai chadar abr




ab woh kapray badal rahi ho gi




so gayi ho gi woh shafaq andaam




sabz Qandil jal rahi ho gi





surkh aur sabz wadiyon ki taraf




woh maray sath chal rahi ho gi




charhtay charhtay kisi pahari par





ab woh karvat badal rahi ho gi





pairr ki chhaal se ragar kha kar





woh tanay se phisal rahi ho gi




nilgon jheel naaf taq pehnay





صندلیں jism mil rahi ho gi





ho ke woh khuwab-e aish se beedar





kitni hi der shall rahi ho gi


ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے

Featured Post

Mirza ghalib fikar insaa par tri hasti se