تیرا زیاں رہا ہوں میں، اپنا زیاں رہوں گا میں


تیرا زیاں رہا ہوں میں، اپنا زیاں رہوں گا میں 
تیرا زیاں رہا ہوں میں، اپنا زیاں رہوں گا میں

تلخ ہے میری زندگی، تلخ زباں رہوں گا میں  


تیرے حضور، تجھ سے دور، جلتی رہے گی زندگی 


شعلہ بجاں رہا ہوں میں، شعلہ بجاں رہوں گا میں

تجھ کو تباہ کر گئے، تیری وفا کے ولولے 


یہ مرا غم ہے میرا غم، اس میں تپاں رہوں گا میں  


حیف نہیں ہے دیکھ بھال میری نصیب میں ترے 


یعنی متاعِ بردہ ءِ کم نظراں رہوں گا میں  


جاز کی دھن اداس ہے، دل بھی بہت اداس ہے 


جانے کہاں بسے گی تو، جانے کہاں رہوں گا میں  


ہم ہیں جدا جدا مگر، فن کی بساطِ رنگ پر 


رقص کناں رہے گی تو، زمزمہ خواں رہوں گا میں


Check this out


Youm E Pakistan By John Elia - یوم پاکستان کے موقع پر

Urdu roman

tera zayan raha hon mein, apna zayan rahon ga mein


talkh hai meri zindagi, talkh zuba rahon ga mein



tairay huzoor, tujh se daur, jalti rahay gi zindagi



shola بجاں raha hon mein, shola بجاں rahon ga mein



tujh ko tabah kar gay, teri wafa ke walwalay




yeh mra gham hai mera gham, is mein Tapan rahon ga mein




haif nahi hai dekh bhaal meri naseeb mein tre




yani mata-e barda hamza kam نظراں rahon ga mein




Jaaz ki dhun udaas hai, dil bhi bohat udaas hai



jane kahan basey gi to, jane kahan rahon ga mein



hum hain judda judda magar, fun ki bsatِ rang par





raqs kinaan rahay gi to, Zamzamah khwan rahon ga mein

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے

Featured Post

Mirza ghalib fikar insaa par tri hasti se