Yohi Din Guzar Jaye Gai - ابے دِلی کیا یونہی دن گزر جائیں گے


ابے دِلی کیا یونہی دن گزر جائیں گے 
Yohi Din Guzar Jaye Gai - ابے دِلی کیا یونہی دن گزر جائیں گے
صرف زندہ رہے ہم تو مر جائیں گے  

رقص ہے رنگ پر رنگ ہم رقص ہیں 

سب بچھڑ جائیں گے سب بکھر جائیں گے
  
یہ خراباتیانِ خرد باختہ

صبح ہوتے ہی سب کام پر جائیں گے  

کتنی دلکش ہو تم کتنا دل جُو ہوں میں 

کیا ستم ہے کہ ہم لوگ مر جائیں گے  

ہے غنیمت کہ اسرار ہستی سے ہم 

بے خبر آئے ہیں بے خبر جائیں گے


Check this out



abay dilli kya yuunhi din guzar jayen ge



sirf zindah rahay hum to mar jayen ge




raqs hai rang par rang hum raqs hain




sab bhichar jayen ge sab bikhar jayen ge




yeh خراباتیان khiirad bakhta




subah hotay hi sab kaam par jayen ge




kitni dilkash ho tum kitna dil jُo hon mein




kya sitam hai ke hum log mar jayen ge




hai ghanemat ke asaraar hasti se hum




be khabar aeye hain be khabar jayen ge


ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے

Featured Post

Mirza ghalib fikar insaa par tri hasti se