Justoju Ban By Jaun Elia - جستجو بن


بھٹکتا پھر رہا ہوں جستجو بن 


Justoju Ban By Jaun Elia -  جستجو بن



سراپا آرزو ہوں آرزو بن 


کوئی اس شہر کو تاراج کر دے 

ہوئی ہے میری وحشت ہائے و ہو بن 

یہ سب معجز نمائی کی ہوس ہے 

رفو گر آئے ہیں تار رفو بن 

معاش بے دلاں پوچھو نہ یارو 

نمو پاتے رہے رزق نمو بن 

گزارے شوق اب خلوت کی راتیں 

گزارش بن گلہ بن گفتگو بن
Check this out



bhatakta phir raha hon justojoo ban


saraapaa arzoo hon arzoo ban


koi is shehar ko taaraaj kar day



hui hai meri wehshat haae o ho ban



yeh sab muajiz namai ki hawas hai



raphoe gir aeye hain taar raphoe ban



muaash be dlan pucho nah yaaro



numoo paate rahay rizaq numoo ban



guzaray shoq ab khalwat ki raatain



guzarish ban gilah ban guftagu ban

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے

Featured Post

Mirza ghalib fikar insaa par tri hasti se