Type Here to Get Search Results !

Search This Blog

Mustaqil Bolta Hi Rehta Ho By Jaun Elia

 


Mustaqil Bolta Hi Rehta Ho By Jaun Elia 

گذر آیا میں چل کے خود پر سے

اک بلا تو ٹلی مرے سر سے 

 

مستقل بولتا ہی رہتا ہوں

کتنا خاموش ہوں میں اندر سے 

 

مجھ سے اب لوگ کم ہی ملتے ہیں

یوں بھی میں ہٹ گیا ہوں منظر سے 

 

میں خمِ کوچہ ء جدائی تھا

سب گزرتے گئے برابر سے 

 

حجرہ ء صد بلا ہے باطن ذات

خود کو تو کھینچیئو نہ باہر سے 

 

کیا سحر ہوگئی دل بے خواب

اک دھواں اٹھ رہا ہے بستر سے 

Tags

Post a Comment

0 Comments
* Please Don't Spam Here. All the Comments are Reviewed by Admin.