Tamana Apni Qimat Koh Rahi Hai By Jaun Elia

Jaun Elia

Tamana Apni Qimat Koh Rahi Hai By Jaun Elia 

تعظیم محبت 

 

ہے مجھ پر طعنہ زن خود میرا احساس

تمنا اپنی قیمت کھو رہی ہے 

 

کہوں کیا، ہر پلک اِس بے خبر کی

مری آنکھوں میں کانٹے بو رہی ہے 

 

عرق آلود چہرے کی ہر اک بوند

نہ جانے کتنے خاکے دھو رہی ہے 

 

خوشا یہ طرزِ تعظیمِ محبت

یہ تعظیمِ محبت ہو رہی ہے 

 

غمِ فرقت کا شکوا کرنے والی

مری موجودگی میں سو رہی ہے

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے

Featured Post

Yaro k Humra Chaley By Jaun Elia