Type Here to Get Search Results !

Search This Blog

Sari Duniya K Gham Humharey Hai By Jaun Elia

 

Jaun Elia

Sari Duniya K Gham Humharey Hai By Jaun Elia 

ساری دنیا کے غم ہمارے ہیں

اور ستم یہ کہ ہم تمہارے ہیں 

دلِ برباد یہ خیال رہے

اُس نے گیسو نہیں سنوارے ہیں 

ان رفیقوں سے شرم آتی ہے

جو مرا ساتھ دے کے ہارے ہیں 

اور تو ہم نے کیا کِیا اب تک

یہ کیا ہے کہ دن گزارے ہیں 

اس گلی سے جو ہو کے آئے ہوں

اب تو وہ راہرو بھی پیارے ہیں  

جوؔن ہم زندگی کی راہوں میں

اپنی تنہا روی کے مارے ہیں 



jaun elia


sari duniya k gham humharey hai by jaun elia


saari duniya ke gham hamaray hain


aur sitam yeh ke hum tumahray hain


dil e barbaad yeh khayaal rahay


uss ne gaisu nahi sanware hain


un rfiqon se sharam aati hai


jo mra sath day ke hare hain


aur to hum ne kya kiya ab tak


yeh kya hai ke din guzaray hain


is gali se jo ho ke aaye hon


ab to woh راہرو bhi pyare hain


جوؔن hum zindagi ki raahon mein


apni tanha rawi ke maaray hain

Tags

Post a Comment

0 Comments
* Please Don't Spam Here. All the Comments are Reviewed by Admin.

Featured Post

 Aaab O Hawa Nehi Kia By Jaun Elia

Top Post Ad